نا تجربے کے باعث پاکستانیوں کاتقریباً 70فیصد سرمایہ کرپٹو میں ڈوب گیا

نا تجربہ کاری کے باعث پاکستانیوں کاتقریباً 70فیصد سرمایہ کرپٹو میں ڈوب گیا

بدھ 16مارچ 2022
کراچی ، فریئر روڈ (123karachi.com)
تحریر : توصیف حنیف
امریکی فیڈرل بینک کی جانب سے شرح سود میں اضافے کی متوقع خبروں کے باعث کرپٹو کرنسی تا حال سنبھل نہیں سکی ہے ۔ امریکہ میں افراط ِزر نے 40سالہ ریکارڈ توڑ دیا 16مارچ 2022کو افراطِ زر کی شرح 7.90کی ریکارڈ بلند سطح تک پہنچ گئی ہے ۔افراط ِ زر کو کنٹرول کرنے کے لیئے امریکی مرکزی بینک نے شرح سود میں اضافہ کرنے کا عندیہ دے دیا ، جس کے باعث سرمایہ کار اسٹاک اور کرپٹو سے پیسہ نکال کر بینکوں میں اپنا پیسہ انویسٹ کرنا چاہ رہے ہیں ۔ جبکہ کازکستان میں بِٹ کوئین کی مائنینگ پر سختی سے پابندی عائد کر دی گئی ہے۔کرپٹو میں پاکستانیوں کی لگائی گئی رقم بھی شدید متاثر ہوئی ہے۔ 70 فیصد سے ذائد پاکستانیوں کی رقم کرپٹو کے کاروبار میں خسارے کا شکار ہوئی ہے ،مطلب یہ کہ جن پاکستانیوں نے تقریباً 100ڈالر کے مساوی رقم کرپٹو میں انویسٹ کی تھی وہ رقم 30ڈالر تک رہ گئی ہے۔ گویا کہ 100ڈالر لگانے والوں کے تقریباً70ڈالر ڈوب گئے ہیں,دوسری جانب جن افراد نے ماہرین کے مشورے سے GMTکوئین خریدا تھا انکا 1ڈالر 40گنا اضافہ ہو کر 40ڈالر کا ہو گیا ، 10سینٹ پر خریدا گیاGMT کوئین 16مارچ کی صبح تقریباً41سینٹ تک پہنچ گیا تھا ۔ ماہرین نے کرپٹو کے کاروبار میں آنے کے خواہشمند افراد کو مشورہ دیا ہے کہ وہ سرمایہ کاری کرنے سے پہلے کیسی ایکسپرٹ سے ضرور مشاورت کر لیں ورنہ انکی رقم ڈوبنے کا قوی اندیشہ ہے ۔

(کرپٹو کی مزید اپڈیٹ حاصل کرنے کے لیئے 123karachi.com کو ملاحظہ کرتے رہیئے .)

اپنا تبصرہ بھیجیں