HBLاور UBLکے عملے کا رویہ صارفین کے ساتھ غیر معیاری ہو گیا ،بینک منیجرز اور عملہ صارفین کو تیسرے درجہ کا شہری سمجھتا ہے

HBLاور UBLکے عملے کا رویہ صارفین کے ساتھ غیر معیاری ہو گیا ،بینک منیجرز اور عملہ صارفین کو تیسرے درجہ کا شہری سمجھتا ہے

جمعرات 17فروری 2022
کراچی ، فریئر روڈ (123karachi.com)
حبیب بینک اور یو بی ایل بینک کے افسران اور عملے کے خلاف صارفین کی شکایات میں بے تحاشہ اضافہ ہو گیا ہے۔بینک منیجر حضرات سے صارفین کا رابطہ کرنا انتہائی دشوار ہو گیا ۔حبیب بینک لیاقت آباد ڈاکخانہ برانچ کے منیجر اظفر تنظیم نے تو صارفین کے فون کالز پر توجہ دینا ہی چھوڑ دی ایک صارف نے بتایا کہ وہ تقریباً 7دنوں سے اظفر تنظیم کو موبائل فون پر کال کر رہے ہیں ، مگر نہ تو وہ کال اٹینڈ کرتے ہیں اور نہ ہی کال بیک کرنے کی زحمت گوارہ کرتے ہیں ۔ اتفاق ہو تو وہ درجنوں بار کال ملانے پر کبھی کبھار کال اٹینڈ بھی کر لیتے ہیں ۔ یہ ہی حال بینک کی لینڈ لائن نمبر پر کال کرنے پر بھی ہوتا ہے، بینک عملہ کال اٹینڈ ہی نہیں کرتا۔اسی طرح یو بی ایل کے افسران بھی یہی رویہ اختیار کرتے ہیں ، یاد رہے کہ بینک محتسب کے پاس بھی سب سے ذیادہ شکایت حبیب بینک اور یو بی ایل کی ہوتی ہیں۔ صارفین نے اسٹیٹ بینک سے اپیل کی ہے کہ بینک عملے کو اکاﺅنٹ ہولڈرز سے رویہ بہتر بنانے کے احکامات جاری کریں کیونکہ حبیب بینک اور یو بی ایل کا بیشتر عملہ صارفین کو تیسرے درجے کا شہری سمجھتاہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں