SBCAسینیٹ الیکشن میں سرخرو،پٹہ سسٹم سیکرٹری بلدیات نجم شاہ کے زیر نگرانی سینیٹ الیکشن ختم ہونے کے باوجود تاحال فعال

500 روپے لینے والے آج کروڑوں کے مالک

123karachi.com
دورانیہ مطالعہ: 02منٹ
بدھ17مارچ2021
کراچی ، فریئر روڈ
لیاقت آباد میں SBCAکے فرنٹ مین جو کہ کچھ سال پہلے تک 10000روپے ماہانہ بھی نہیں کما رہے تھے اب وہ لیاقت آباد کی غیر قانونی تعمیرات کے پیکج لے کر 7 سے 37کروڑ کے مالک بن گئے ہیں ۔123karachi.com کو ملنے والی ایک تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق شکیل مکرانی کے اثاثے 8کروڑ ، کامران کامل کے اثاثے 4کروڑ ، اور شارخ کے اثاثے 17کروڑ اور ان کے دیگر ساتھیوں کے اثاثے 37کروڑ تک پہنچ چکے ہیں۔
واضح رہے کہ عرصہ سات سال قبل مذکورہ افراد ماہانہ 10ہزار کے لگ بھگ کمایا کرتے تھے مگر اب ان کی ماہانہ آمدنی نصف کروڑ سے زائد ہوگئی ہے۔ یاد رہے کہ تقریباً 7سال قبل لیاقت آباد کے7افراد پر مشتمل ایک گروپSBCA کی رپورٹنگ کرنے کے لیئے میڈیا میں داخل ہوا تھا، مذکورہ گروپ کے افراد غیر قانونی تعمیرات کرنے والے بلڈرز کے پاس جا کر ان کی سائٹوں سے اپنے وزٹنگ کارڈ چھوڑ کر 500روپے اٹھایا کرتے تھے۔ شہر کے بلڈروں کے پاس ابھی تک ان افراد کے وزٹنگ کارڈ موجود ہیں، جن کی پشت پر بلڈر نے 500 روپے تحریر بھی کیا ہوا ہے۔ تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق مذکورہ 7رکنی لیاقت آباد کے گروپ کے اثاثے ان کے قریبی رشتہ داروں کے نام پر بھی بنائے گئے ہیں۔جبکہ اس گروپ کے تعلقات کراچی کے بلڈر مافیا کی اربوں روپے کی ٹھیکیداری کرنے والے گروپوں سے بھی ہیں۔ مذکورہ افراد کے اثاثے دبئی ، روس، کینیڈا، حتیٰ کہ ترکی اور چائنا میں بھی موجود ہیں۔واضح رہے کہ مذکورہ گروپ کی سرپرستی وزیر بلدیات کی سطح سے ہو رہی ہے۔رپورٹ کے مطابق مذکورہ ریکٹ اور ان کے سرپرست نیب کے ریڈار پر آ چکے ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں